داعش کے حملوں میں تین بار بچ جانے والی بہادر لڑکی

دنیا بھر میں حملوں کے دوران متعدد لوگ اپنی جان گنوا چکے ہیں.لیکن کچھ لوگ حادثا تی طور پر بچ بھی جاتے ہیں.ایسی ہی مثال ہمیں ایک لرکی کی ملتی ہے جو چار بار دہشت گردی کے حملوں سے بچی ہے.بارسلونا می ہونے والے دھماکے میں 17 افراد ہلاک ہوئے.اس افسوسناک واقعہ کو اپنی آنکھوں میں قید کرنے والی ایک ایسی خاتون بھی ہیں جو 3 حملوں میں بچ نکلنے میں کامیاب ہو گئیں۔ 26 سالہ یہ خاتون داعش کے تین حملوں میں بچ نکلنے میں کامیاب ہو گئیں.
تفصیلات کے مطابق میلبرن کی رہائشی 26 سالہ جولیا مناکو اُس وقت بارسلونا کے ایک تجارتی علاقہ لاس رمبلاس میں ایک شاپنگ مال میں موجود تھیں جب دہشتگردوں نے وین راہگیروں پر چڑھا دی جس کے بعد دہشتگردوں نے ایک قریبی ہوٹل میں گھُس کر شہریوں کو بھی یرغمال بنایا۔ اس سے قبل جون میں جولیا لندن کے میٹرو اسٹیشن پر موجود تھیں جب ایک کار سوار شخص نے لندن برج پر موجود شہریوں پر گاڑی چڑھا دی تھی ۔
لندن حملے سے چند روز قبل جولیا پیرس کے معروف نوٹرے ڈیم کتھڈرل میں موجود تھیں۔ اور چاقو بردار شخص نے باہر کھڑے پولیس اہلکار پر حملہ کر دیا تھا ۔ ان تینوں حملوں کی ذمہ داری داعش نے قبول کی تھی۔ تین حملوں میں بچ نکلنے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے جولیا نے کہا کہ مجھے ایسا نہیںلگتا کہ اب مجھے گھر چلے جانا چاہئیے۔ انہوں نے کہا کہ میں یورپ کے مزید شہروں کی سیر کروں گی اور دہشتگرد مجھے بالکل بھی خوفزدہ نہیں کر سکتے۔اس بہادر خاتون جیسی مثالیں ہمیں بہت کم ملتی ہیں.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *