کراچی کی ایک خاتون نے ایسی سہولت فراہم کی کہ پوری دنیا تعریف کرنے پر مجبور ہو گئی

کراچی کی ایک باصلاحیت گھریلو خاتون فرح ناز فاروقی نے پاکستان کی معروف آئی ٹی کمپنی آئی ٹی ٹیک کے ساتھ مل کر ایک مربوط نظام تیار کیا ہے جس کا رواں ماہ کراچی سے آزمائشی بنیادوں پر آغاز کردیا جائے گا۔ اس پروجیکٹ کا مقصد ناخواندہ، ٹیکنالوجی سے نابلد اور انٹرنیٹ کی سہولت یا اسمارٹ فونز کے بغیر زندگی کے مسائل سے نبرد آزما طبقے کو سفری سہولت فراہم کرنا ہے۔ اس نظام کی بدولت موبائل کے بغیر بھی ہر فرد اپنے قریب موجود موٹرسائیکل، رکشہ، نجی کار اور منی وینز(ہائی روف) کے ذریعے سفری سہولت حاصل کرسکے گا۔

اس کی ایک خاص بات ہے کہ پہلے سے دستیاب آن لائن سفری سہولتوں کے برعکس اس نئی عوامی سہولت میں کوئی پیک چارجز نہیں ہوں گے بلکہ 24 گھنٹے یکساں نرخ کے حساب سے کرائے وصول کیے جائیں گے جو پہلے سے طے شدہ ہوں گے۔ اس سہولت کو عوام کے لیے قابل برداشت اور سستا بنانے کے لیے صرف نئی اور ایئرکنڈیشنڈ گاڑیوں تک ہی محدود نہیں رکھا گیا بلکہ بغیر ایئرکنڈیشنڈ اور بہتر فٹنس کی حامل پرانی گاڑیاں بھی اس سہولت کا حصہ ہوں گی۔فرح ناز فاروقی نے نے نجی چینل کو بتایا کہ یہ ایک مکمل سافٹ ویئر ہے جو تیاری کے آخری مراحل میں ہے اور اس کی آف لائن جانچ جاری ہے جلد ہی کراچی میں تجرباتی بنیادوں پر اس سروس کا آغاز کیا جائے گا اور نتائج کو دیکھتے ہوئے کراچی سمیت دیگر بڑے شہروں میں بھی سہولت متعارف کرائی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ اس سہولت کی پہلی بڑی خوبی انٹرنیٹ اور اسمارٹ فون کے بغیر استعمال ہونا ہے، دوسری بڑی خوبی مناسب اور قابل برداشت کرائے ہیں جو مسافت اور سفر کے دورانیے (وقت) کو پیش نظر رکھتے ہوئے مرتب کیا گیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *