فیس بک نے نیا فیچر متعارف کروا دیا جس سے بہت سے ضرورت مند مستفید ہوں گے

سماجی رابطے کا مشہور پلیٹ فارم فیس بک نے اپنا دائرہ کار بڑھاتے ہوئے کہا ہے کہ اب لوگوں میں امداد کے جذبے اور عمل کو پروان چڑھانے کےلیے خاطر خواہ اقدامات کیے جارہے ہیں تاکہ لوگوں میں بچوں کی اچھی تربیت، خون کا عطیہ دینے یا امدادی تنظیموں میں رضاکارانہ خدمات کو ممکن بنایا جاسکے۔اب سے چند روز پہلے فیس بک کے بانی مارک زکربرگ نے یہ اعلان کیا تھا کہ وہ فیس بک سماجی (چیریٹیبل) پروگرام کے ذریعے دی جانے والی رقم میں سے فیس بک کا حصہ ختم کررہے ہیں اور اب 100 فیصد رقم ان ہی مقاصد کے لیے خرچ کی جائےگی جس کےلیے عوام نے رقم فراہم کی ہے۔


مارک زکربرگ نے یہ بھی کہا کہ انٹرنیٹ پر چندہ جمع کرنے کی ایک معروف ویب سائٹ گو فنڈ میں عطیات کا 2.9 فیصد حصہ اپنی فیس کے طور پر لیتی ہے اور فیس بک بھی اس میں سے کچھ رقم کا حصہ لے رہی تھی لیکن اب یہ فیس ختم کردی گئی ہے اور آپ کی دی ہوئی 100 فیصد رقم فیس بک ضرورت مندوں تک پہنچانے میں مدد دے گا۔اس کے علاوہ انہوں نے گزشتہ فروری میں شروع کئے جانے والے کمیونٹی ہیلپ پروگرام کا بھی ذکر کیا جس کے تحت کوئی بھی شخص مدد کےلیے مصیبت میں پھنسے لوگوں کی مدد کی درخواست کرسکتے ہیں۔ اسی فیچر کے ذریعے دو افراد نے ہاروے طوفان کے بعد 20 افراد کی جان بچائی تھی۔


اسی طرح فیس بک نے حال ہی میں لوگوں کو خودکشی سے بچانے اور انہیں خون کا عطیہ دینے کی ترغیب دینے جیسے پروگرام کا آغاز بھی کیا۔ اس کا آغاز ستمبر میں بھارت میں شروع کیا گیا جہاں اب تک خون کا عطیہ دینے والے 40 لاکھ افراد رجسٹرڈ ہوچکے ہیں۔2018 میں بنگلا دیش میں اس کا آغاز کیا جائے گا۔اس کے علاوہ خودکشی سے بچانے والے فیچر کے ذریعے اب تک 100 افراد کو اپنی جان لینے سے روکا گیا ہے۔ اس ضمن میں خودکشی کا رحجان رکھنے والے افراد پوسٹس اور فلیگس کے ذریعے دوستوں کو آگاہ کرسکتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *