اب موبائل بھی آپ کے ہاتھوں کی لکیریں پڑھ سکے گا

سمارٹ‌ فون جدید دور کی ضرورت بن گئے ہیں مختلف کمپنیوں نے سمارٹ فون متعارف کروائے ہیں اُن میں سے ایک نام سام سنگ ہے. سام سنگ اب ایک نیا موبائل متعارف کروانا چاہتا ہے جو کے ہاتھوں کی ہتھیلیوں کو پڑھ سکے گا اوراسے بطور پاس ورڈ استعمال کرے گا۔
سام سنگ نے اس ضمن میں ایک پیٹنٹ کی درخواست دائر کی ہے جو آپ کے ہاتھوں کی لکیروں کو پڑھ سکے گی تاہم سام سنگ کا کہنا ہے کہ یہ روایتی فنگر پرنٹ اور چہرے کی شناخت یعنی فیس ریکگنیشن جیسے بایومیٹرک نظام کی جگہ نہیں لے گی اور سام سنگ نے ان دونوں طریقوں کو جاری رکھنے کا عندیہ دیا ہے۔

سام سنگ اسے ہتھیلیوں کے نشانات کے ساتھ اپنے اسمارٹ فون کو اور محفوظ بنانا چاہتا ہے۔ ایک اور تجزیہ کار نے کہا کہ سام سنگ مستقبل کے اسمارٹ فون میں ہتھیلی کو بطور پاس ورڈ استعمال کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔اگرچہ سیکیورٹی سوالات کے جوابات بھی یہ کام کرسکتے ہیں مگر ان سوالات کے جوابات جاننے والا آپ کے فون تک رسائی حاصل کرسکتا ہے۔ اس ایجاد کے ذریعے سام سنگ کا فون آپ کے ہاتھوں کی لکیروں کو نوٹ کرکے انہیں بطور الفاظ یا پاس ورڈ استعمال کرسکے گا۔یہ کہنا ٹھیک ہو گا کہ سام سنگ فون سیکیورٹی کے بارے میں سنجیدہ ہے اور اس کےلیے نئی ٹیکنالوجی پر کام کررہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *