بھارت کسی کو منہ دیکھانے کے قابل نہ رہا

بھارت اور سری لنکا کے درمیان فیروڑ شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم دہلی پر کھیلا جانے والا تیسرا ٹیسٹ ڈرا پر ختم ہو گیا جب کہ اس دوران شہر میں اسموگ کی وجہ سے مہمان کھلاڑیوں کی حالت غیر ہونے کا معاملہ بدستور موجود ہے.

وزیر کھیل دیاسری جیاسیکرا نے بتایا کہ ہم نے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل سے دہلی کی آلودہ فضا میں میچ کے حوالے سے شکایت کی ہے، جس پر کھیل کی عالمی گورننگ باڈی کی جانب سے ہمیں مناسب قدم اٹھانے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے وزیر کھیل دیاسری جیاسیکرا کا مزید یہ کہنا ہے کہ کونسل نے ہمیں ضروری کارروائی کی یقین دہانی کرا دی اور ہم نہیں جانتے یہ ایکشن کس قسم کا ہوگا جبکہ دوسری طرف سری لنکن ٹیم مینجمنٹ نے بھارتی حلقوں کی جانب سے اسموگ کے نام پر بہانے بازی کا الزام مسترد کردیا۔

بھارت کے کچھ کھلاڑیوں، حلقوں اور میڈیا کی طرف سے ایسا تاثر دیا جارہا ہے جیسے سری لنکن ٹیم نے صورتحال کی بڑھا چڑھا کر عکاسی کی اور اس سلسلے میں بہانے بازی کی گئی۔ اس حوالے سے دہلی کے ڈاکٹر کی رپورٹ کو بھی پیش کیا جا رہا ہے جنھوں نے تین کھلاڑیوں کا آکسیجن ٹیسٹ لے کر ان کو نارمل قرار دیا تھا۔

سری لنکا کے کوچ نک پوتھاس نے کا یہ کہنا ہے کہ صرف ہمارے ہی کھلاڑیوں کی حالت خراب نہیں ہوئی بلکہ خود بھارتی فاسٹ بولر محمد شامی بھی فیلڈ میں الٹی کرتے ہوئے دکھائی دیے، ہم اپنی جانب سے کچھ بھی نہیں کہہ رہے، پلیئرزکی طبیعت اسی آلودگی کی وجہ سے خراب ہوئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *