قطر کے معاملے پر پاکستان کو کیا کرنا چاہئیے،پرویز مشرف نے بتا دیا

سابق صدر اور جنرل (ر) پرویز مشرف نے قطر اور سعودیہ کے اتحادی عرب ممالک کے درمیان جاری کشیدگی میں پاکستانی حکومت کے کردار کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ وہ حیران ہیں کہ پاکستان قطر بحران سے کس طرح نمٹ رہا ہے؟انہوں نے قطر کے خلاف سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، مصر اور بحرین پر مشتمل اینٹی ٹیرر کوآرٹیٹ (اے ٹی کیو) کا ساتھ نہ دینے پر پاکستانی حکومت پر تنقید کی۔

عرب نیوز کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ قطر کبھی پاکستان کے ساتھ نہیں تھا اور اس بات کا ہم نے کئی مرتبہ مشاہدہ کیا۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات ہمیشہ پاکستان کے بہترین دوست رہے ہیں، ہمیں کبھی بھی ان ملک کے خلاف کچھ نہیں کرنا چاہیے، یہ دونوں ممالک ہمیشہ ہمارے ساتھ کھڑے ہوئے ہیں اور ہمیں ان کی دوستی کی قدر کرنی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ اس دنیا میں تینوں بڑی طاقتوں کےپاکستان میں اسٹریٹجک مفادات ہیں، ہمیں ان مفادات کو اپنے فائدے کے لیے استعمال کرنا چاہیے۔ان کا کہنا تھا کہا آج کی دنیا میں جغرافیائی اقتصادیات، جغرافیائی سیاست اور جغرافیائی حکمت عملی کا تعین کیا جارہا ہے.
انہوں نے کہا کہ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات ہمیشہ پاکستان کے بہترین دوست رہے ہیں، ہمیں کبھی بھی ان ملک کے خلاف کچھ نہیں کرنا چاہیے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *