سعودی عرب اب غیر ملکی ملازمین کے ساتھ وہ کام کرنے والا ہے جو آپ نے سوچا بھی نہ ہو گا

سعودی عرب اب غیر ملکی ملازمین کے ساتھ وہ کام کرنے والا ہے جو آپ نے سوچا بھی نہ ہو گا،واضح رہے کہ پاکستانیوں کی بہت بڑی تعداد روزگار کے سلسلے میں سعودی عرب میں مقیم ہیں.سعودی وزارت خزانہ نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر واضح کرتے ہوئے کہا کہ نجی اداروں کے غیر ملکی ملازمین سے وصول کی جانیوالی مذکورہ رقم سعودی عملے کی تقرری پر آنیوالے اخراجات میں صرف کی جائیگی ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ وصولی 2018 کے قومی بجٹ کے تحت ہوگی۔سعودی وزارتخزانہ کے مطابق ایسی نجی کمپنی جس میں

غیر ملکی ملازموں کی تعداد سعودی ملازمین کی تعداد سے زیادہ ہوگی اس سے فی غیر ملکی ملازم ماہانہ 400ریال وصول کئے جائیں گے،جبکہ سعودی ملازمین سے غیر ملکی ملازمین کی تعداد کم ہونے کی صورت میں فی غیر ملکی کارکن ماہانہ 300ریال لئے جائیں گے۔ذرائع کے مطابق 2018 کے بعد یعنی 2019ء کے دوران ایسی کمپنی سے جس میں سعودی ملازمین کی تعداد غیر ملکیوں سے کم ہوگی فی غیر ملکی کارکن 600ریال اور ایسی کمپنی سے جس میں غیر ملکی ملازمین کی تعداد سعودی ملازموں سے کم ہوگی فی غیر ملکی کارکن500ریال ماہانہ وصول کئے جائیں گے۔2020ء میں ایسی کمپنیوں سے جن میں غیر ملکی ملازمین کی تعداد سعودی ملازمین سے زیادہ ہوگی فی غیر ملکی کارکن800ریال ماہانہ لئے جائیں گے اور اگر کمپنی میں غیر ملکی ملازمین کی تعداد سعودی کارکنان سے کم ہوگی تو ایسی حالت میں فی غیر ملکی کارکن 700ریال وصول کئے جائیں گے.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *