پیغمبر خدا حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی تعلیمات پر عمل کرکے ہم دنیا بھر میں امن اور محبت کی شمع روشن کرسکتے ہیں

انبیاء کی اطاعت ہی سے دنیا میں امن قائم ہوسکتا ہے ۔ حضرت عیسیٰ علیہ السلام اور بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح کے یوم پیدائش پر قوم کو مبارکباد ۔بین المذاہب کمیشن برائے امن وہم آہنگی جنرل سیکریٹری و سفیر امن وانسانی حقوق ، بین المذاہب ہم آہنگی علامہ محمد احسان صدیقی
کرسمس کے موقع پر بین المذاہب کمیشن ہم آہنگی کے وفد کا سینٹ پیٹرک چرچ (صدر) اور ہولی ٹرینٹی چرچ کا دورہ ۔

کراچی ( )آج کا دن مسلمانوں اور مسیحی برادری دونوں برادری کیلئے لئے اہمیت کا حامل ہے اور خوشی کا دن ہے ۔ پیغمبر خدا حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی تعلیمات پر عمل کرکے ہم دنیا بھر میں امن اور محبت کی شمع روشن کرسکتے ہیں۔ دنیا میں جابرانہ نظام کیخلاف عملی جدوجہد کیلئے انبیاء کرام کی زندگی ہمارے لئے نمونہ عمل ہے ۔ ان خیالات کا اظہار بین المذاہب کمیشن برائے امن و ہم اہنگی کی دعوت پر تمام مکاتبہ فکر کے علماء اور تمام مذاہب کے قائدین نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر آرچ بشپ جوزوف کوٹس نے کہاکہ کرسمس کا تہوار محبت، امن و سلامتی اور بھائی چارگی کا پیغام دیتا ہے ۔ آپ سب کی جوکاوشیں امن کا پیغام پھیلانے جو مذاہب کے درمیان پھیلانے کا وسیلہ بنتی ہیں جس پر مسیحی برادری آپ کا دل کی تہہ شکریہ ادا کرتی ہے ۔ معاشرے کے تمام طبقات کو دہشت گردی سے چھٹکارا حاصل کرنے کیلئے متحدہ ہونا ہوگا اور مسلح افواج اور تمام اداروں کا ساتھ دینا ہوگا۔ بین المذاہب کمیشن برائے امن وہم

آہنگی کے جنرل سیکریٹری وسفیر امن وانسانی حقوق ، بین المذاہب ہم آہنگی علامہ محمد احسان صدیقی نے کہا کہ یہ دن حضرت عیسیٰ علیہ اسلام کی محبت ، امن ، برداشت اور انسانی ہمدردی کے پیغام کو یاد کرنے کا موقع فراہم کرتا ہے ۔ مسیحی برادری کی پاکستان کی ترقی اور بہتری کیلئے خدمات قابل ستائش ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ بین المذاہب کمیشن برائے امن و ہم آہنگی محسن انسانیت حضرت محمد مصطفی ﷺ کے بتائے گئے اصولوں اور بانی پاکستان کے فرمودات کے مطابق مسیحی اور دیگر اقلیتوں کے حقوق کا مکمل تحفظ کرتی رہے گی ۔بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح کے یوم پیدائش کے موقع پر انہوں نے مزید کہا کہ حکمراں بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح کے افکار اور نظریات سے کوسوں دور ہیں ۔ قوم کو عہد کرنا ہوگا کہ ہم وطن عزیز سے اس طبقاتی نظام کے خاتمے میں اپنا کردار ادا کرکے پاکستان کو قائد اور اقبال کے افکار اور نظریات کے مطابق ایک جمہوری ریاست بنانے میں عملی جدوجہد کریں گے ۔ ہمیں ملک پاکستان سے

دہشت گردی سے چھٹکارا دلاکر اُسے قائد اعظم کا پاکستان بنانا ہوگا اور قائد اعظم کے بتائے ہوئے رہنماء اصولوں پر کاربند رہنا ہوگا تاکہ ہم معاشرے میں باوقار مقام حاصل کرسکیں۔ شیعہ علماء کے علامہ نے کہا کہ تمام مذہبی قائدین اور تمام مسالک کے علماء مذہبی رواداری اور اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنے اتحاد سے دشمن کی سازش کو ناکام بنانا ہوگا۔ سکھ کمیونٹی کے کلاش کمار سرحدی نے کہا کہ ہم تمام مذہبی قائدین نے اس کرسمس کے موقع پر اپنے ان مسیحی بھائیوں کی خوشی میں برابر کے شریک ہیں۔ اور ہم اپنے مذہبی عقائد کے مطابق رہتی عبادات اور مذہبی تہوار منانے میں بالکل آزاد ہیں۔ پنڈت نورتن داس نے کہا کہ ہمیں مذہبی ہم آہنگی کو فروغ دینا ہوگا ۔ اس موقع پر قائد اعظم کی یوم پیدائش اور کرسمس کا کیک کاٹا گیا اور ملکی سلامتی و خوشحالی کیلئے دعا کی گئی ۔ اس موقع پر فادر ماریو، فادر صالح ڈائیگو، ڈاکٹر گوبند، علامہ محمد ریحان مصطفی، پنڈت شام لال شرما، روی داس وگیلا، پرویز گل، سلیم مائیکل ایڈوکیٹ، مولانا محمد عرفان، خرم صدیقی ودیگر بھی موجود تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *