خواجہ آصف پر سیاہی پھینکنے اور نواز شریف پر جوتا پھینکے جانے کی ذمہ داری تحریک انصاف پر ڈال دی گی….

خواجہ آصف پر سیاہی پھینکے جانے اور نواز شریف کو جوتا مارے جانے کے واقعات کے بعد مسلم لیگ ن نے پی ٹی آئی قیادت کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کر لی ہے۔ قومی اخبار میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق جوتا اور سیاہی پھینکنے کے ان واقعات سے متعلق رپورٹس جاری کر دی گئی ہیں، ذرائع نے بتایا کہ دو اداروں کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مسلم لیگ ن کے 13، تحریک انصاف کے 5 اور پیپلز پارٹی کے 6 رہنماؤں کے ساتھ ایسے واقعات رونما ہو سکتے ہیں، رپورٹ میں کہا گیا کہ ن لیگ کے اندر ایک گروپ واقعات کی ذمہ داری تحریک انصاف پر ڈال کر عمران خان ، جہانگیر ترین ، عبد العلیم خان، شاہ محمود قریشی اور فواد چودھری پر بھی جوتے ، سیاہی یا انڈے مارے جانے جیسے واقعات کی منصوبہ بندی کر چکا ہے۔

اور فیصل آباد میں پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کو جوتا مارنے کی کوشش کرنے والا ن لیگی کارکن اس منصوبہ بندی کا حصہ تھا۔ اشتعال انگیزی کی سیاست کو مزید تیز کرنے کے لیے مختلف سیاسی جماعتوں میں موجود شاہ سے زیادہ شاہ کے وفادار ایسا ماحول پیدا کرنے میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ رانا ثنا اللہ ، خواجہ سعد رفیق، رانا ارشد، رانا مشہود، زعیم حسین قادری، عابد شیر علی، طلال چودھری اور دانیال عزیز نشانہ بن سکتے ہیں۔
رپورٹ میں کہا گیا کہ ایسا گروپ بھی متحرک ہے جو پیپلز پارٹی کے رہنماؤں پر بھی حملے کر سکتا ہے۔ مریم نواز کی راولپنڈی میں تقریر میں نواز شریف پر جوتا پھینکے جانے کی ذمہ داری تحریک انصاف پر ڈال کر ن لیگی کارکنوں کو ایک اشارہ دیا گیا ہے کہ واقعات تحریک انصاف کروارہی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *