اپریل فول ۔۔ اپریل فول ۔۔

شاعری : اشفاق بن اعجاز

اپریل فول ۔۔ اپریل فول ۔۔
طشنام گری کا نیا اصول ۔۔

ھادی نے فرمایا تھا ۔۔
پاٹ ہمیں سکھلایا تھا ۔۔
بولے جھوٹ بہتان بازی ۔۔
نہیں سچا وہ میرا ساتھی ۔۔

پشت پہ ڈال کے ھادی کو ۔۔
سب کچھ بیٹھے ہم تو بھول ۔۔
اپریل فول ۔۔۔ اپریل فول ۔۔
طشنام گری کا نیا اصول ۔۔

کبھی اٹھا کے دیکھو ماضی ۔۔
کیا ایسے تھے شہدا غازی ؟؟
وہ سچ کی خاطر جان لٹاتے ۔۔
اور تم کرو جھوٹ درازی ۔۔

وہی مصحف تھا انکا بھی ۔۔
جمائی جس پہ تم نے دھول ۔۔
اپریل فول ۔۔ اپریل فول ۔۔
طشنام گری کا نیا اصول ۔۔

حق کو جو ٹھکراۓ گا ۔۔
باطل کو اپناۓ گا ۔۔
بروز محشر مسکن میں ۔۔
سنگ اسی کے جاۓ گا ۔۔

جھانک کے اندر خاکی کو ۔۔
ضمیر کو تو کبھی ٹٹول ۔۔
اپریل فول ۔۔ اپریل فول ۔۔
طشنام گری کا نیا اصول ۔۔

مزاح میں بھی جو جھوٹ سناۓ
یا کسی کا دل دکھاۓ ۔۔
کوئی نہ تعلق میرا اس سے ۔۔
قرآن میں رب یہ خود فرماۓ ۔۔

کر کوئی ایسا حیلہ بھائی ۔۔
اشفاق کی نہ ہو بات مجہول ۔۔
اپریل فول ۔۔۔ اپریل فول ۔۔
طشنام گری کا نیا اصول۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *