واٹس ایپ استعمال کرنے والوں کے لیے خطرناک خبر۔

تفصیلات کے مطابق ایک معروف ویب سائٹ نے انکشاف کیا ہے کہ پیغام رسانی کی مقبول موبائل ایپلی کیشن واٹس ایپ میں ڈیلیٹ کیا گیا مسیج درحقیقت ختم نہیں ہوتا بلکہ ریپلائی کی صورت میں بھیجا گئے صارف کو ڈیلیٹ شدہ ٹیکسٹ اس کے پاس موجود رہتا ہے۔ ویب سائٹ نے سکرین شارٹ کے ذریعے بتایا ہے کہ ایک صارف نے مقررہ وقت کے اندر پیغام ڈیلیٹ کر دیا تاہم جب دوسرے فرد نے اس کا ریپلائی دیا تو وہ ڈیلیٹ شدہ ٹیکسٹ اس کے پاس موجود تھا۔ ویب سائٹ کا کہنا ہے کہ مشاہدے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اینڈروئیڈ اور ونڈوز اسمارٹ فونز میں استعمال ہونے والے واٹس ایپ کے گروپ اور پرائیویٹ چیٹ باکس میں ڈیلیٹ ہونے والا میسج حقیقت میں ختم نہیں ہوتا بلکہ ریپلائی کی صورت میں وہ ٹیکسٹ موجود رہتا ہے۔ دوسری جانب واٹس ایپ نے فیچر کے اس نقص پر کوئی ردعمل نہیں دیا۔ واضح رہے کہ واٹس ایپ نے ڈیلیٹ فیچر متعارف کرایا تھا جس میں 7 منٹ کے اندر اندر پیغام بھیجنے والا اپنا میسج ڈیلیٹ کرسکتا تھا اور ڈیلیٹ ہونے کی صورت میں بھیجنے والے اور موصول کرنے والے کے پاس سے وہ پیغام ختم ہو جاتا تھا۔ خیال رہے کہ واٹس ایپ نے اپنا ڈیلیٹ فیچر گزشتہ سال ہی متعارف کروایا تھا جس پر صارفین نے اسے ایک عمدہ اور تعمیری اضافہ اور سہولت قرار دیا تھا ۔ معروف ویب سائٹ کی ریسرچ اگر صحیح ثابت ہوتی ہے تو اس سے واٹس ایپ صارفین کے اس ایپلیکیشن پر اعتماد کو ٹھیس پہنچنے کا اندیشہ ہے۔ واٹس ایپ انتظامیہ کی جانب سے تاحال اس پر ردعمل سامنے نہیں آیا تاہم صارفین نے اس حوالے سے اب محتاط انداز اختیار کر لیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *