مغربی مورخین نے برطانوی ملکہ کے بارے میں یہ کیا تہلکہ انگیز انکشاف کردیا:

تاریخ میں پہلی مرتبہ تحقیق کاروں نے ایک تہلکہ خیز انکشاف کیا کہ برطانوی ملکہ الزبتھ کا شجرہ نسب حضرت محمد سے ملتا ہے.میل آن لائن کے مطابق مغربی مورخین نے دعویٰ کیا ہے کہ ملکہ الزبتھ قرون وسطیٰ کے ان مسلم حکمرانوں کی نسل میں سے ہے جن کا شجوہ نسب حضرت محمد سے ملتا ہے.
مورحین کا کہنا ہے کہ قرون اسطیٰ کے ہسپانیہ کے حکمران امام حسن کی نسل میں سے تھے.جو حجاج مقدس سے سپین منتقل ہوئےاور حکومت بھی کی.ان میں ایک بادشاہ جس کا نام المعتمد ابن عباد بتایا گیا تھا. اس کی ایک بیٹی تھی جس کا نام زیدا بتایا جا تا ہے جو سپین میں رہتی تھی.یہ 11 ویں صدی کا واقع ہے.جب وہ شہزادی سیوائیل چلی گی اور عیسائیت مذ ہب میں شامل ہو گی. مورخین کا دعویٰ ہے کہ ملکہ برطانیہ اس شہزادی کی نسل میں سے ہے.
تحقیقات کے مطابق یہ بات سا منے آئی ہے کہ سپین کے قدیم ریکارڈ نے بھی ان مورخین کے دعویٰ کی تصدیق کی ہے. مصر کے سابق مفتی اعظم علی گوماء نے بھی اس بات کی تصدیق کی ہے.واضح رہے کے ابتدائی طور پر1986ء میں برطانوی ادارے برکز پیریج نے بھی یہ دعویٰ کیا تھا. یہ وہ ادارہ ہے جو شاہی خاندان کے شجرہ نسب کا ریکارڈ رکھنے کا ذمہ دار ہوتا ہے.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *