سب سے بڑا جمہوری تاجر تاحیات نااہل

سپریم کورٹ نے نواز شریف کو تا حیات نا اہل قرار دے دیا .جس آئین کا نواز شریف بار بار تذکرہ کرتے ہوئے فرماتے ہیں کہ میں آئین اور قانون کے ساتھ کھڑا ہوں اسی آئین کے تحت اسے نا اہل قرار دیا گیا ھے امید ہے وہ اب بھی آئین اور قانون کی حکمرانی کی بات کریں گے .نواز شریف نے سیاست میں تجارت کی جو طرح ڈالی تھی وہ اب اپنے انجام کی طرف گامزن ہے . نواز شریف کی سیاست ختم ہو چکی . ہو سکتا ہے نواز شریف لاکھوں دلوں کی دھڑکن ہوں مگر آئین نے دلوں کی دھڑکن کو دیکھتے ہوئے فیصلے نہیں کرنے ہوتے . اور ان لاکھوں دلوں میں سے اکثریت نواز شریف کے ساتھ نہیں بلکہ اپنے اپنے مفادات کے ساتھ ہے جو اس نظام نے نواز شریف کے ساتھ وابستہ کر رکھے تھے .
معزز عدالت کو چاہئے کہ اس آرٹیکل 62 کا ہتھوڑا ہر اس شخص پر چلائے جو ماضی میں پارلیمنٹ‌ کا ممبر رہا ہو یا وہ بننے کے لیے الیکشن کے کاغذات جمع کروائے . اس چھلنی سے گذرنے کے بعد ہی اسے الیکشن لڑنے کی اجازت دی جائے.

ابھی نواز شریف اور اس کے نظام کے زوال کا آغاز ہوا ھے .. جیسے جیسے وقت بیتے گا بہت کچھ ان کے ہاتھوں سے نکلتا جائے گا ..
رات کتنی بھی تاریک ہو سحر تو ہو گی .
شب کا انجام یہی آج تلک دیکھا ھے .
اس کی تقدیر میں ذلت ہے بتا دو اس کو
آج جھوٹ صداقت سے الجھ بیٹھا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *