پاکستان پیپلز پارٹی کے ساتھ تب سے ہوں جب شہید ذوالفقارعلی بھٹو صاحب نے اقتدار سنبھالا.سید مہدی علی شاہ

گلگت بلتستان (رپورٹ)
پاکستان پیپلز پارٹی کے سابقہ وزیر اعلی سید محدی شاہ نے میڈیا کو بتایا کہ وہ پاکستان پیپلز پارٹی کے ساتھ ابتدیٰ سے ہیں، انہوں نے ،شہید ذوالفقار علی بھٹو، شہید بیبی بینظیر بھٹو اور موجودہ سیاست کا دور دیکھا ہے،انہوں نے بتایا کہ ان کا سیاسی کیرئیر تب شروع ہوا جب شہید ذوالفقار علی بھٹو نے اقتدار سنبھالا۔اس وقت ہمیں ناردن کہا جاتا تھا اس وقت وہ ناردن ایریا کے مختلف جگہوں پہ گئے جہاں اب تک کوئی ڈی سی یا ای سی بہی نہ گیا ہو،پورے گلگت بلتستان کے کونے کونے میں وہ گئے اور لوگوں کو سنا اور انہوں نے ایک ایسی انقلابی اصلاحت کی سب سے پہلے انہوں نے جاگیرداری نظام کو ختم کیا،دو ضلع کی جگہ پانچ ضلع بنایا اور ہر ضلع میں فوری طور پہ اسکول اور کالیج بنائے۔اس لئے آج تک وہاں لوگ بھٹو کو یاد کرتے ہیں،اور اس وقت ہمیں یہی امید تھی کہ ہمیں جو اپنے حقوق آج تک نہیں ملے وہ ہمارے قاعد سے ہی ملیگا،اس وقت ذوالفقار علی بھٹو نے صوبا بنایا تھا اور کہا تھا کہ صوبا مینے نہیں تاریخ نے بنایا ہے۔سید مہدی علی شاہ نے مزید بتایا کہ 1975میں کالیج یونین اسکردو کہ وہ پریزیڈنٹ تھے اور پی ایس ایف کے وہ جنرج سیکریٹری تھے اس وقت بھٹو صاحب سے انکی ملاقات ہوئی بغیر کسی پروٹوکول اور سکیورٹی کے کیون کہ بھٹو صاحب کو کبھی کسی سکیورٹی کی ضرورت نہیں پڑی، 1975 سے لیکے آج تک پارٹی کے ساتھ شانا بشانا کھڑے ہیں،ہم نے اس دوراں بہت مشکلات بہت طوفان کا سامنا کیا مارشلا دیکھا جو ضیاالحق نے لگایاسخت عزیتیں سہی،مجھے پاکستان پیپلز پارٹی سے بہت عزت ملااور مینے بہی اس پارٹی کی خدمت میں اپنی جوانی نشاور کی،اس وقت ہمارا ایک ہی مسئلا ہے اور وہ صوبے کا نارا ہے،گزشتہ پیپلز پارٹی کی گورنمینٹ میں زرداری صاحب کی مدد سے جب یوصف رضا گیلانی پرائم منسٹر تھے تو گلگت بلتستان کو ایگزیکیوٹو آرڈر پہ صوبا بنایا تھا ۔لیکن مکمل صوبا نہیں بنایا،اب ہمارا مطالبا ہے کہ گلگت کو مکمل صوبا بنایا جائے اور ہمیں امید ہے کہ اس بار بلاول بھو زرداری جب وزیر اعظم بنینگے تو گلگت کو ضرور صوبا بنائینگے او اپنے نانا کی طرح ایک تاریخ لکھینگے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *