ایڈووکیٹ احسان احمد قریشی پہ قاتلانا حملے کی مزمت کرتے ہیں۔ایڈووکیٹ آفتاب بخاری

لاڑکانہ۔
ایڈووکیٹ ڈسٹرکٹ بار ایسوسئیشن لاڑکانہ کی جانب سے سینیئر وکلا اعجاز احمد انڑ اور احسان احمد قریشی پہ قاتلانا حملے کے خلاف احتجاجی مظاہرا اور کورٹس کا بائکاٹ۔

لاڑکانہ ڈسٹرکٹ بار کے سینیئر میمبر وکیل احسان قریشی نے اپنے وکلا برادری کے ہمراہ جن میں ایڈووکیٹ اعجاز احمد انڑ ۔آفتاب علی شاہ۔ایڈووکیٹ ندیم قریشی۔ایڈووکیٹ اختیار لاشاری و دیگر کے ساتھ تمام کورٹس کا بائکاٹ اور احتجاج کرتے بتایا کہ پرانہ بس اسٹینڈ کہ نزدیک رسول آباد محلا میں میرا گھر واقع ہے جہاں پہ ھتھیار بندوں نے مجھ پہ میرے گھر پہ حملا کیا۔جن میں جان محمد کنگو ۔خیر محمد انڑ۔اور 5 نامعلوم افراد شامل ہیں۔وکیل احسان قریشی نے بتایا کہ یہ معاملا میرے ساتھ چھ ماہ سے چل رہا تھا ۔مجھے مختلف ھربوں سے حراساں کیا جا رہا ہے۔اور ابھی 3 دن سے میں اپنے گھر کا مین گیٹ لگوا رہا ہوں جس پہ یہ مجھے نہیں لگانے دے رہے اور مجھ پہ اور میرے دوست وکیل اعجاز احمد انڑ پہ حملا کیا۔اور زخمی کرکے حملاور بھاگ گئے۔جس کی ایف آ آر سول لائین پہ درج کی گئی ہے۔جس کا کرائم نمبر 113 ہے۔جس میں سیکشن 324 اور 385 لگایا گیا ہے۔لیکن پولیس کی جانب سے کوئی تعاون نہیں ہوا۔گوئی گرفتاری عمل میں نہ آئی ۔جس وجہ سے ہم نے تمام کورٹس کا بائکاٹ کیا ہے۔اور جب تک گرفتاری نہیں ہوگی یہ احتجاج جاری رہیگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *