اسلام

کیا حاملہ خواتین کو روزے رکھنے چاہئیں؟ اسلام اس بارے میں کیا کہتا ہے؟

رمضان المبارک کا مقدس مہینہ ہے۔ ایسے میں حاملہ خواتین تذبذب کا شکار رہتی ہیں کہ انہیں روزے رکھنے چاہئیں یا نہیں اور اس حوالے سے اسلام کیا کہتا ہے؟ اس مسئلے کے متعلق قرآن و حدیث میں واضح احکامات موجود ہیں۔ ویب سائٹ ’پڑھ لو‘ کے مطابق اسلامی تعلیمات کہتی ہیں کہ کسی پر

الوداع اے ماہ رمضان

رمضان المبارک اب رخصت ہونے کو ہے، جس کے استقبال کے لیے آپ اور ہم سب نے تیاری کی تھی۔ ہم دلی اضطرابی کیفیت کے ساتھ اُمنگوں اور خواہشات کے درمیان رب العالمین کی رحمت کے منتظر بھی ہیں۔ روزہ پورا ایک نصاب ہے۔ حضرت سلمان فارسیؓ بیان کرتے ہیں کہ ماہِ شعبان کے آخری

جمعة الوداع کے فضائل وبرکات

اللہ تعالیٰ کی طرف سے عطا کردہ ماہِ رمضان کی برکتوں اور رحمتوں کو سمیٹنے والے عاشقانِ رسولِ عربی صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم رمضان المبارک کے آخری عشرہ کا بالخصوص انتظار کرتے ہیں ،اعتکاف کا اہتمام کرتے ہیں اور شبِ قدر کو پا لینے کی حسین خواہش کو اپنے دل میں سمائے رکھتے

ختم نبوت اسلام کا بنیادی عقیدہ ہے. علماء

عقیدہ ختم نبوت اسلام کا بنیادی عقیدہ ہے ۔ اس عقیدے کا انکار دراصل دین اسلام کا انکار ہے۔ ان خیالات کا اظہار عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کےمرکزی ناظم نشرواشاعت مولانا عزیزالرحمن ثانی ، مولانا جمیل الرحمن اختر، پیرمیاں رضوان نفیس، مبلغ لاہور مولانا عبدالنعیم، قا ری علیم الدین شاکر ، قاری ظہورالحق، مولانا

پہلے روزے سے تیسویں روزے تک جسم میں کیا کیا تبدیلیاں آتی ہیں؟

روزے کے روحانی پہلوؤں اور ثمرات سے تو کسی کو انکار نہیں ہے مگر اس کے اثرات جسم پر بھی مرتب ہوتے ہیں جس کا اندازہ ایک روزے دار سے بہتر کسی کو نہیں ہوسکتا۔ روزہ نہ صرف انسان کو صبر و شکر کی جانب راغب کرکے اس کے انسانی زندگی پر بہترین اثرات مرتب

روزے رکھنے کے طبی فوائد

مذہبی اہمیت کے ساتھ ساتھ روزے کے کئی طبی فوائد سے ہم آگاہ ہیں لیکن اب نئی تحقیق میں سائنسدانوں نے اس کا مزید ایک ایسا فائدہ بتا دیا ہے کہ سن کر ہر مسلمان سبحان اللہ کہنے پر مجبور ہو جائے گا۔ ویب سائٹ sciencetrends.com کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ

قرآن حکیم کی وہ صورت جسے صبح روشنی نکلنے سے قبل پڑھیں تو جسم میں ایسی تبدیلی آئے گی کہ آپ خود دنگ رہ جائیں گے.

دنیا میں انسان کو مختلف امراض سمیت کئی طرح کی بیماریوں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے لیکن اللہ تعالیٰ نے پہلے ہی اپنے کلام مبارکہ یعنی قرآن مجید میں ان پریشانیوں کا حل رکھا ہے لیکن بدقسمتی سے ہم اس پر توجہ نہیں دیتے. اگر کسی شخص کو بیماری کے سبب کسی جسمانی عضو کے

رمضان المبارک ہم سب کیلئے خیروبرکت کا ذریعہ

سال کے گیارہ مہینے ہم اس طرح گذارتے ہیں کہ ہمارے صبح و شام کے زیادہ تر اوقات دنیاوی کاموں مثلاً تجارت، ملازمت، زراعت، روزگار کی تلاش میں گذرتے ہیں. اپنے لئے جسمانی لذّتیں حاصل کرنے کی فکر میں گذرتے ہیں اور اگرکوئی آدمی فرائضِ شرعیہ کا پابند بھی ہو تو وہ ان فرائض اور

رزق، اولاد اورعمر میں برکت کا آسان نسخہ ……!

کسی شخص نے حضرت علیؓ ابن ابی طالب سے دریافت کیا کہ کتے ایک وقت میں دس، دس بچے جنتے ہیں لیکن تعداد میں وہ اتنے نظر نہیں آتے جبکہ بکریاں اور بھیڑیں ایک یا دو بچے جنتی ہیں اس کے باوجود بھیڑ بکریوں کی تعداد کتوں سے زیادہ ہوتی ہے۔ حضرت علی ؓ کرم

وقت کی اہمیت

امام شافعی رحمہ اللہ کا ارشاد ہے کہ ایک مدت تک میں صوفیا کرام کے پاس رہا ان کی صحبت سے یہ بات معلوم ہوئی کہ وقت تلوار کی مانند ہے آُپ اس کوعمل کے ذریعہ کا ٹئے ورنہ وہ آپ کو حسرتوں میں مشغول کرکے کاٹ ڈالے گا۔ امیر المومنین حضرت عمر بن عبدالعزیز